Announcement

Collapse
No announcement yet.

Unconfigured Ad Widget

Collapse

collection of Ghazals (غزل)

Collapse
This is a sticky topic.
X
X
 
  • Filter
  • Time
  • Show
Clear All
new posts

  • collection of Ghazals (غزل)

    Assalamalikum

    is thread main urdu ki ghazalian post karni hain :rose

    Collection of famous ghazals
    Last edited by .; 6th November 2016, 13:01.
    اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
    اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔


  • #2
    Re: collections of Ghazals (غزل)

    کِتنے آئینوں میں اِک عکس دکھایا ہے مُجھے
    زندگی نے جو اکیلا کبھی پایا ہے مجھے

    تو وہ موتی کہ سمندر میں بھی شعلہ زن تھا
    مَیں وہ آنسو کہ سرِ خاک گرایا ہے مجھے

    اِتنی خاموش ہے شب، لوگ ڈرے جاتے ہیں
    اور مَیں سوچتا ہوں کِس نے بلایا ہے مجھے

    یہ الگ بات کہ مٹّی میں پڑا رُلتا ہوں
    یوُں تو فن کار نے شہ کار بنایا ہے مجھے

    اپنا ادراک ہے دراصل خُدا کا ادراک
    شاید اس خوف نے خُود مُجھ سے چھُپایا ہے مجھے

    اے خدا، اب تیرے فردوس پہ میرا حق ہے
    تو نے اِس دَور کے دوزخ میں جلایا ہے مجھے
    اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
    اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔

    Comment


    • #3
      Re: collections of Ghazals (غزل)

      ہولے ہولے ڈھانپ رہی ہے رات ہمیں انجانے میں
      لوگ بہت مصروف ہیں سارے اک دوجے کو جگانے میں

      تم کیا جانو بند آنکھوں پر کیا کیا صدمے ٹوٹتے ہیں
      عمر گزر جاتی ہے صاحب، خواب کا بوجھ اٹھانے میں

      ورنہ خاک پہ نقش گری ہی کرتے عمر گزاری ہے
      آپ آئے تو رنگوں کی بھی بات چلی ویرانے میں

      یہ لمحہ جو آخر شب کی وحشت میں مجھ تک پہنچا
      جانے کتنی عمر لگے گی اس لمحے کو بتانے میں

      موج، ہوا، ساحل کی حیرت سے آگے بھی دنیا ہے
      جیسے موتی سیپ میں، جیسے خوشبو اس کاشانے میں

      اندر اندر سے اب اس کی یاد کا رستہ ڈھونڈ لیا ہے
      یونہی تکلف سا رہتا تھا آنکھ کے رستے جانے میں
      اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
      اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔

      Comment


      • #4
        Re: collections of Ghazals (غزل)

        منزل کے آس پاس دھواں دیکھ رہا ہوں
        صدیوں کی مسافت کو زیاں دیکھ رہا ہوں

        کھویا ہواہوں عالم بے اعتبار میں
        ناداں ہوں حقیقت میں گماں دیکھ رہا ہوں

        سینے میں چبھ رہی ہیں وہ ماضی کی کرچیاں
        ٹوٹا ہوا شیشے کا مکاں دیکھ رہا ہوں

        سربستہ راز کھول رہا ہے فشار خون
        اک یاد کو رگ رگ میں رواں دیکھ رہا ہوں

        کچھ واسطہ نہیں مجھے کوئے رقیب سے
        میں حسن کے قدموں کے نشاں دیکھ رہا ہوں
        اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
        اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔

        Comment


        • #5
          Re: collections of Ghazals (غزل)

          بے شک گزر رہی ہے مسلسل عذاب میں
          لیکن عجیب لطف ہے اس اضطراب میں

          شامل کبھی نہیں تھی میں تیرے نصاب میں
          پر خود کو ڈھونڈتی رہی چاہت کے باب میں

          کتنی اداسیاں تھیں مرے چار سو بسی
          واپس پلٹ گئی مری تعبیر خواب میں

          خوابوں کے ڈوب جانے کی اب فکر کیا کریں
          جب ڈال بیٹھے کشتیِ دل ہم چناب میں

          اس نے بھی دردِ ہجر مقدر میں لکھ دیا
          میں نے بھی بھیج دی ہے جدائی جواب میں
          اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
          اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔

          Comment


          • #6
            Re: collections of Ghazals (غزل)

            آنکھوں میں بیکراں ملال کی شام
            دیکھنا تم عشق کے زوال کی شام

            میری قسمت میں تیرے ھجر کا دن
            میری حسرت تیرے وصال کی شام

            دھکی دھکی تیرے جمال کی صبح
            مہکی مہکی تیرے خیال کی شام

            رُوپ صَدیوں کی دوپہر پہ مُحیط
            اوڑھنی ھے کہ ماہ و سال کی شام

            پھر وھی در ھے وھی صدا مُحسن
            پھر وھی میں ، وھی سوال کی شام
            اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
            اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔

            Comment


            • #7
              Re: collections of Ghazals (غزل)

              تیری راہوں میں بھٹکنے کے لیے زندہ ہوں
              میں ازل سے ہی تِرے حُسن کا جویندہ٭ ہوں

              تیرے دل کی بھی نہ مل پائی مجھے شہریت
              کس سے پوچھوں کہ میں کس مُلک کا باشندہ ہوں

              بھا گئے تھے تیری آنکھوں کے سمندر جن کو
              میں اُنہی ڈُوبنے والوں کا نُمائیندہ ہوں

              دیکھنا ہے تو مُجھے ایک نظر دیکھ ہی لے
              صُبح کا تارا ہوں لیکن ابھی تابندہ ہوں

              کسی جُوڑے میں سجایا نہ گیاجو مجھ سے
              میں قتیل آج بھی اُس پُھول سے شرمندہ ہوں
              اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
              اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔

              Comment


              • #8
                Re: collections of Ghazals (غزل)

                ریگِ صحرا کی سنسنی اور میں
                اک تھکی ہاری اونٹنی اور میں

                تیرے نقش قدم کی کھوج میں ہیں
                آج بھی تھل میں چاندنی اور میں

                تیرا کمرہ ، دہکتی انگیٹھی
                برف پروردہ روشنی اور میں

                چند فوٹو گراف آنکھوں کے
                دیکھتے ہیں شگفتنی اور میں

                لائٹیں آف ، لائنیں انگیج
                ایک کمرے میں کامنی اور میں

                گنگ بیٹھا ہوا ہوں پہروں سے
                ایک تصویر گفتنی اور میں
                اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
                اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔

                Comment


                • #9
                  Re: collections of Ghazals (غزل)

                  اُٹھا کے راکھ سے ذرّہ، ستارہ کر کے دیکھیں گے
                  فلک، دریائے حیرت کا کنارہ کر کے دیکھیں گے

                  کسی دن، آگ کے شعلے سے بادل کو بنائیں گے
                  کسی دن، برف گالے کو شرارہ کر کے دیکھیں گے

                  کوئی پل، خواب جگنو روک لیں گے اپنی مٹھی میں
                  کوئی پل، روشنی کو استعارہ کر کے دیکھیں گے

                  کبھی، خاموش لمحوں میں کریں گے گفتگو جذبے
                  کبھی، گویا رُتوں میں حرف اشارہ کر کے دیکھیں گے

                  تمہارے نام ، کچھ پل کر کے صدیوں کا سکوں پایا
                  تمہارے نام، جیون اب تو سارا کر کے دیکھیں گے

                  سنو! ہم کر چکے بیعت، جنوں کو کر چکے مرشد
                  سنو! کس نے کہا ہم، استخارہ کر کے دیکھیں گے

                  ترے احساس، میں ضم ہو گیا احساس عاشی کا
                  ترے احساس کو خوشبو کا دھارا کر کے دیکھیں گے
                  اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
                  اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔

                  Comment


                  • #10
                    Re: collections of Ghazals (غزل)

                    ہماري آنکھوں نے بھي تماشا عجب عجب انتخاب ديکھا
                    برائي ديکھي ، بھلائي ديکھي ، عذاب ديکھا ، ثواب ديکھا

                    نہ دل ھي ٹھرا ، نہ آنکھ جھپکي ، نہ چين پايا، نہ خواب آيا
                    خدا دکھائے نہ دشمنوں کو ، جو دوستي ميں عذاب ديکھا

                    نظر ميں ہے تيري کبريائي، سما گئي تيري خود نمائي
                    اگر چہ ديکھي بہت خدائي ، مگر نہ تيرا جواب ديکھا

                    پڑے ہوئے تھے ہزاروں پردے کليم ديکھوں تو جب بھي خوش تھے
                    ہم اس کي آنکھوں کے صدقے جس نے وہ جلوہ يوں بے حجاب ديکھا

                    يہ دل تو اے عشق گھر ہے تيرا، جس کو تو نے بگاڑ ڈالا
                    مکاں سے تالا ديکھا ، تجھي کو خانہ خراب ديکھا

                    جو تجھ کو پايا تو کچھ نہ پايا، يہ خاکداں ہم نے خاک پايا
                    جو تجھ کو ديکھا تو کچھ نہ ديکھا ، تما م عالم خراب ديکھا
                    اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
                    اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔

                    Comment


                    • #11
                      Re: collections of Ghazals (غزل)

                      زندگی ہے اک سراب ، کیا کروں………
                      جیسے دیوانے کا خواب ،کیا کروں……
                      جس کی مدہوشی فقط ہو عارضی….
                      میں بھلا ایسی شراب ،کیا کروں……..
                      تیرے حصّے کے سبھی کانٹے عزیز……
                      اپنے حصّے کا گُلاب ،کیا کروں………….
                      جھُوٹ کے جنگل میں سچائ کا بیج…..
                      دیکھتا ہُوں کیسے خواب،کیا کروں……
                      حرف تو کھُرچے سبھی تقدیر نے……….
                      میں بھلا خالی کتاب ،کیا کروں……
                      میں کہاں سے لاؤں پتھر ڈھُونڈھ کر…
                      اینٹ کا دوں کیا جواب ،کیا کروں
                      وقت کی راسیں نہیں ہیں ہاتھ میں….
                      عُمر ہے پا بہ رکاب ،کیا کروں………….
                      بیچ سکتا ہوں نہیں اپنا ضمیر…….…..
                      کس طرح ہُوں کامیاب ، کیا کروں…….
                      آپ کی نظر۔ کرم کے واسطے…………
                      بولئے عالی جناب ،کیا کروں……….…
                      دل اگرچہ ہو گیا آباد اب………………..
                      ایک میں خانہ خراب ، کیا کروں………
                      خُود کو پالوں یا اُسے کھو دوں صبا….
                      کون سا جھیلوں عذاب ،کیا کروں
                      اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
                      اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔

                      Comment


                      • #12
                        Re: collections of Ghazals (غزل)

                        Kon kehta hai tujhe main ne bhula rakha hai
                        teri yadon ko kaleje se laga rakha hai

                        lab pe aahen bhi nahi aankh mein aansu bhi nahi
                        dil ne har raz muhabbat ka chupa rakha hai

                        tune jo dil ke andhere mein jalaya tha kabhi
                        wo diya aj bhi sine mein jala rakha hai

                        dekh ja aake mahakate huye zakhmon ke bahar
                        main ne ab tak tere gulashan ko saja rakha hai
                        اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
                        اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔

                        Comment


                        • #13
                          Re: collections of Ghazals (غزل)

                          soch ker yeh mujhe malaal nahiN
                          kon mujh saa tabaah haal nahiN

                          ik tanomand hai shajar dukh ka
                          gham mira ab gham-e-nihaal nahiN

                          loag poocheN hain naam tak us ka
                          sirf afsurdagi sawaal nahiN

                          kuch bhi kehna kahaaN hai kuch mushkil
                          kuch kahooN dil ki, yeh majaal nahiN

                          loag haNste haiN haal per jo mire
                          maiN bhi haNsta hooN kiya kamaal nahiN

                          aa gaii moat gham se mer bhi chuka
                          phir bhi zindah hooN kiya muhaal nahiN

                          mehwar-e-zehn ho ga'ay haiN mire
                          kab raheN woh mira khayaal nahiN

                          thaa yuN pur-kaif deed ka manzar
                          kab takhaiyul men ab dahmaal nahiN

                          misl-e-jaanaaN kahooN jise maiN khalish
                          aisaa hergiz koii jamaal nahiN
                          اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
                          اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔

                          Comment


                          • #14
                            Re: collections of Ghazals (غزل)

                            لاکھ ناکام سہی میں تو ہوں نازاں پھر بھی
                            ہر مسرت پہ ہے بھاری غمِ جاناں پھر بھی

                            عمر بھر ڈھونڈتے رہنا ہے ہمیں تو اس کو
                            اس کے ملنے کا نہ ہو کوئی امکاں پھر بھی

                            مانتا ہوں کہ مجھے ضبطِ فغاں کرنا ہے
                            جانتا ہوں کہ نہیں کام یہ آساں پھر بھی

                            جب بہاروں کا نشاں بھی نہ خزاں نے چھوڑا
                            میری آنکھوں میں رہا رنگِ بہاراں پھر بھی

                            عشق پابندِ وفا ساری جفائیں سہ کر
                            اپنے معیارِ وفا سے ہے پشیماں پھر بھی

                            ہم نے الٹے تو بہت کون و مکاں کے پردے
                            ہاتھ آیا نہ ترا گوشئہ داماں پھر بھی!!

                            مجھ کو معلوم تھا ظلمت کا فسوں طاری ہے
                            میری پلکوں نے کیا جشنِ چراغاں پھر بھی

                            عمر بھر ہم نے کہے حسن کے قصے لیکن
                            تشنئہ لفظ رہے سینکڑوں عنواں پھر بھی

                            ہم نے توبہ کے بہت خود پہ بٹھائے پہرے
                            کر گئی کام مگر فطرتِ انساں پھر بھی

                            ہمسفر کوئی نہیں راہِ وفا میں۔۔۔ ۔ لیکن
                            دل یہ کہتا ہے کہ ہے ساتھ نگہباں پھر بھی

                            سختیاں جھیل چکے مشقِ ستم بھی دیکھی
                            کھیل ہے اپنی نظر میں غمِ دوراں پھر بھی

                            ہم کو دیوانہ کہا سارے جہاں نے لیکن
                            ہم ہی نکلے غمِ جاناں کے نگہباں پھر بھی

                            دل ترے غم کے عوض عشرتِ دنیا چاہے
                            لاکھ ناداں ہو اتنا نہیں ناداں پھر بھی

                            دل کو مانوس خزاں سے نہ کہیں کر لینا
                            آخر آئے گی یہاں فصلِ بہاراں پھر بھی

                            میں اٹھاتا ہی رہا جرم و خطا کے طوفاں
                            اس پہ چھائی ہی رہی رحمتِ یزداں پھر بھی

                            راحتیں لاکھ میسر ہوں قفس میں کیفی
                            دل کو ڈستا ہی رہے گا غمِ زنداں پھر بھی
                            اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
                            اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔

                            Comment


                            • #15
                              Re: collections of Ghazals (غزل)

                              تجھے علم ہے اے طبیب جاں تیرا پیار میری حیات ہے

                              میں مریض ہوں تیرے قرب کا مجھے دور جا کے دوا نہ دے

                              یہاں سب اندھیر پرست ہیں یہاں روشنی کی مجال کیا

                              یہ چراغ پھر بھی چراغ کوئی آتے جاتے بجھا نہ دے

                              تم گئے دنوں میں جو ساتھ تھے میرے قلب و جاں کا ثبوت تھے

                              یہ بلاوجہ تیرا روٹھنا میری زندگی کو مٹا نہ دے

                              تیرے سامنے مرے ہمسفر میری دھڑکنوں کی بساط کیا

                              تیرا اس طرح مجھے دیکھنا کہیں میری عمر گھٹا نہ دے
                              اللھم صلی علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما صلیت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔
                              اللھم بارک علٰی محمد وعلٰی آل محمد کما بارکت علٰی ابراھیم وعلٰی آل ابراھیم انک حمید مجید۔

                              Comment

                              Working...
                              X